عفت عمر اور علی گل پیر کے وارنٹ گرفتاری جاری

جوڈیشل مجسٹریٹ نے ماڈل عفت عمر اور ٹیلی ویژن اداکار علی گل پیر کے وارنٹ گرفتاری کردیے ہیں جبکہ گلوکارہ میشا شفیع کو آئندہ سماعت پر طلب کرلیا ہے۔

گزشتہ روز لاہور جوڈیشل مجسٹریٹ میں عفت عمر اور علی گل پیر کے خلاف ہتک عزت کیس کی سماعت ہوئی جس میں دونوں عدالت کے روبرو پیش نہیں ہوئے۔ گلوکار علی ظفر نے میشا شفیع کیس میں دونوں کے خلاف ہتک عزت کا مقدمہ کر رکھا ہے۔

عدالت نے عفت عمر اور علی گل پیر کو نوٹس جاری کیے تھے تاہم مسلسل غیر حاضری پر اب دونوں کے خلاف ناقابل ضمانت وارنٹ گرفتاری جاری کردیے گئے ہیں۔
ماڈل عفت عمر نے گزشتہ روز ہونے والی سماعت کے لیے حاضری سے اسثتنیٰ کی درخواست دی تھی جبکہ کیس میں نامزد لینا غنی، فریحہ ایعوب، فیضان اور حسیم الزماں نے مستقل حاضری سے استثنیٰ کی درخواستیں دی تھیں۔ عدالت نے تمام درخواستوں کو مسترد کردیا ہے۔

عدالت نے اپنے تحریری فیصلے میں یہ کہا ہے کہ کیس میں نامزد ملزمان غیرحاضری کی وجہ سے عدالت کو مطمئن کرنے میں ناکام رہے ہیں۔

عدالت نے گلوکارہ میشا شفیع کو اگلی سماعت پر پیش ہونے کا حکم دیتے ہوئے کیس کی سماعت 6 اکتوبر تک ملتوی کردی ہے۔

خیال رہے کہ 2018ء میں میشا شفیع نے علی ظفر پر الزام عائد کیا تھا کہ علی ظفر نے انہیں متعدد مرتبہ جسمانی ہراساں کیا جس پر علی ظفر نے ان کے خلاف ہتک عزت کا مقدمہ دائر کر دیا۔ عفت عمر اور علی گل پیر پر مبینہ طور پر علی ظفر کے خلاف سوشل میڈیا مہم چلانے کا الزام ہے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں